حکومت نے وفاقی بجٹ میں قابلِ تجدید توانائی کیلئے اقدامات اٹھاتے ہوئے بجلی سے چلنے والی گاڑیوں پر کسٹم ڈیوٹی کی شرح کم کرنے کا اعلان کیا ہے۔

وزیرِ خزانہ مفتح اسماعیل کا بجٹ پیش کرتے ہوئے اعلان کیا کہ حکومت زندگی کے ہر شعبے میں متبادل توانائی متعارف کرانے کیلئے کوشاں ہے تا کہ فوسل فیولز کے استعمال پر انحصار میں کمی لائی جا سکے۔

ان کا کہنا تھا کہ اس مقصد کے حصول کیلئے ماحول دوست گاڑیوں کے استعمال کو فروغ دینے کی بہت ضرورت ہے۔ اس لیے بجلی کی گاڑیوں کیلئے چارجنگ سٹیشنز پر عائد 16 فیصد کسٹم ڈیوٹی واپس لینے کی تجویز ہے۔

مفتاح اسماعیل نے کہا کہ بجلی سے چلنے والی گاڑیوں کی درآمد پر عائد کسٹم ڈیوٹی کی شرح 50 فیصد سے کم کر کے 25 فیصد کرنے اور 15 فیصد ریگولیٹری ڈیوٹی کی چھوٹ دینے کی تجویز ہے۔

وزیرِ خزانہ نے بتایا کہ مقامی طور پر الیکٹرک گاڑیوں کی اسمبلی کیلئے سی کے ڈی کٹس کی 10 فیصد رعایتی شرح پر امپورٹ کرنے کی تجویز ہے۔